70

مسلہ کشمیر کی گونج مراکش میں‌بھی

راولپنڈی ٹائمز(نیوز ڈیسک،پ ر) YFKانٹرنیشنل کشمیر لابی گروپ(یوتھ فورم فار کشمیر) کے کارکن زمان باجوہ نے گزشتہ ہفتے مراکش کا دورہ کیا جس میں انہوں نے مراکش کے شہر’ فیض ‘میں ہونے والی’’ انتہا پسندی اورتشددکی روک تھام کیلئے بین الاقوامی یوتھ فورم کانفرنس‘‘ میں شرکت کی۔
زمان باجوہ نے کشمیر کے نکتہ نظرکو اجاگر کیا جہاں بھارت کشمیریوں کی آزادانہ اور پر امن تحریکِ آزادی کو دہشت گردی کے ساتھ جوڑنے کی کوشش کر رہا ہے۔
انہوں نے کشمیر کی تحریکِ آزادی کو دہشت گردی سے منسلک کرنے والے تمام لوگوں سے سوال کیا کہ کیا وہ تمام کشمیری دہشت گرد ہیں جو سڑکوں پر نکل کر پر امن انداز میں آزادی کیلئے جدو جہد کر رہے ہیں؟ کیا وہ تمام معصوم خواتین دہشت گرد ہیں جنہیں بھارتی قابض افواج کی جانب سے آزادی مانگنے کے جرم میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنا گیا؟انہوں نے کہا، نہیں! ہمیں آزادی کی تحریک اور دہشت گردی کے درمیان فرق کر نے کی اشد ضرورت ہے۔
اس کانفرنس کا انعقاد سلطنتِ مراکش کی وزارتِ کھیل ونوجوانان نے اسلامک کانفرنس یوتھ فورم برائے امن و اشتراک کے تعاون سے کیا جس کی اعلیٰ سر پرستی شہنشاہِ معظم محمد ششم نے کی، کانفرنس میں مراکش سے 100 اور OIC ممالک کے 50 نوجوانوں نے شرکت کی۔
تنازعۂ کشمیر کے تناظر میں کانفرنس کے شرکاء اور معزز مہمانوں کے ساتھ کی جانے والی اہم ملاقاتوں میں ’فیض‘ کے میئر اورجسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ گروپ کے صدر درس الاعظمی الادریسی، نائب وزیر اعظم فلسطین اوروزیر ثقافت ڈاکٹر زیاد ابو عامر، اور سیکر ٹری جنرل ماڈل اقوامِ متحدہ 2017ایسٹرڈنادیہ رزقیطہ، بھی شامل تھیں۔
YFKانٹرنیشنل کشمیر لابی گروپ(یوتھ فورم فار کشمیر)، ایک غیر جانبداربین الاقوامی این جی او(NGO) ہے جو اقوامِ متحدہ کی قراردادوں کے مطابق تنازعۂ کشمیر کے پُر امن حل کیلئے کوشاں ہے۔

Facebook Comments

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں