38

انتہا پسند ہندو سرکار مسلمانوں کے خلاف فرقہ وارانہ فسادات کے نیا ڈرامہ رچا دیا

سہارنپور۔۔۔۔اتراکھنڈ میں بی جے پی کی قیادت والی سرکاربننے کے بعد سے ریاست میں مسلمانوں کیخلاف تشدد بھی شروع ہوگیا ہے۔ ہندوشدت پسند تنظیمیں کسی نہ کسی بہانے مسلمانوں کیخلاف زہر افشانی کرتی نظر آرہی ہیں۔ گزشتہ دنوں ہری دوار ضلع کے رائے والا اور کنکھل میں مسلمانوں کیخلاف فرقہ وارانہ تشدد کی آگ ابھی ٹھنڈی نہیں ہوئی تھی کہ پوڑی گڑھوال ضلع کے کوٹ دوار میں مسلمانوں کیخلاف تشدد کا معاملہ سامنے آگیا۔ تشدد کا سبب مسلم نوجوان کی ہندو لڑکی سے تعلقا ت اور دونوں کا فرار ہونا ہے۔ کوٹ دوار میں شدت پسندوں کے ذریعے مسلمانوں کیخلاف زہر اگلا گیا اور پھر انہیں دوڑا دوڑا کر سرعام پیٹا گیااور نفرت انگیز نعرے لگائے گئے کہ دیوی بھومی کو مسلمانوں سے آزاد کرایا جائیگا۔ہندو شدت پسند تنظیموں کے کارندوں نے ایک گھنٹے تک اسٹیشن روڈسے لیکر گوکھلے روڈتک توڑ پھوڑ ، ہنگامہ اور مارپیٹ کی ۔ پولیس موقع پر پہنچ کر شرپسندوں کیخلاف کارروائی کرتے ہوئے 25افراد کیخلاف سنگین دفعات میں مقدمہ درج کرلیا۔کوٹ دوار کے تمام مقامات پر پولیس فورس تعینات کردی گئی ہے۔

Facebook Comments

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں