32

یونین کونسل جاتلی کے دیہات جاتلی ،حصال ،رتیال ،بینس ، بہیر اور دیگر میں شام اور صبع کے اوقات میں گیس کی ظالمانہ لوڈشیڈنگ دورانیہ آٹھ گھنٹے سے تجاوز کر گیا

جاتلی(نامہ نگار) یونین کونسل جاتلی کے دیہات جاتلی ،حصال ،رتیال ،بینس ، بہیر اور دیگر میں شام اور صبع کے اوقات میں گیس کی ظالمانہ لوڈشیڈنگ دورانیہ آٹھ گھنٹے سے تجاوز کر گیا لوگ لکڑیاں جلانے پرمجبوررویہ تبدیل یا احتجاج افسران کے فون بند صارف شکایت کے لیے در در کی ٹھوکریں کھانے پر مجبورتفصیلات کے مطابق جاتلی اور اس سے ملحقہ دیہات کو پچھلے ایک مہینے سے صبع ہوتے ا ور شام کو سورج ڈھلتے ہی گیس کی سپلائی بند کر دی جاتی ہے جس وجہ سے لو گ رات گے تک گیس کی آمد کا انتظار کرتے ہیں اکثر اوقات انہیں رات کو بھوکا سونا پڑتا ہے اور صبع کے اوقات میں بچوں کو سکول اور دفتری ملازمین کوبغیر ناشتہ کیے اور بغیر پریسنگ یونیفارم کے دفتروں کو جانے پر مجبورہر کر رہ گے ہیں عوام محکمہ سوئی گیس کے رویے سے سخت نالاں ہو کر سڑکوں پر آنے کے لیے تیار ہو گے ہیں ان کا کہنا ہے کہ ہمیں اس بات کا علم ہے کہ جب ہم لوگ سڑکوں پر نکلیں گے تو پھر افسران بالا ہماری منت سماجت کے لیے پہنچ جائیں گے کہ آپ احتجاج ختم کریں ہم آپ کا مسئلہ حل کر دیں گے جو کہ لولی پاپ کے سوا کچھ نہیں ہوتا بل کی ادائیگی کرنے کے باوجود اگر ہمیں بر وقت گیس نہ ملے تو پھراس سے اچھا کہ لکڑیاں ہی جلا لی جائیں مقامی لوگوں نے اراکین اسمبلی سے معاملے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے

Facebook Comments

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں