19

پیرحمیدالدین سیالوی نے ن لیگ کی حمائیت سے ہاتھ کھینچ لیا 10 دسمبر کو دھوبی گھاٹ فیصل آباد جلسے کا اعلان

اسلام آباد(آصف شاہ سے)ختم نبوت معاملہ کا مجرم سامنے نہ آیا تو ملک جام کر دینگے، پیر قاسم سیالوی مسلم لیگ (ن) سے علیحدیگی اختیار کرتے وہئے میدان میں آگئے، 30 سے زائد استعفوں کی دھمکی۔ استعفوں کی تعداد میں اضافہ ہوگا کمی نہیں ہوگی ، دھوبی گھاٹ پر کانفرنس سے حکومت مخالف تحریک کا آغاز کیا جائے گا۔پیر قاسم سیالوی کا کہنا ہے کہ یہ ختم نبوت کانفرنس ہے دنیا بھر کے مسلمانوں سے اپیل کی جاتی ہے کہ اس میں شرکت کریں ، قادیانیوں کے خلاف تحریک چکا کر اس کامیاب بنائیں گے ۔ انکا کہنا تھا کہ اجازت ملے یا نہ ملے دھوبی گھاٹ میں جلسہ لازمی ہوگا، ہم پر انگلیاں اُٹھائی جا رہی ہیں کہ ہماری حکومت کے ساتھ ڈیل ہوچکی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ رانا ثناء اللہ کا استعفیٰ نہیں آیا لیکن اب ارکان اسمبلیوں کے استعفے آئیں گے ، آئینی ترمیم کے ذمہ داروں کو سزا ملنے تک احتجاج جاری رکھا جائے گا۔ دوسری جانب پاکستان کا دربار عالیہ سلیمانیہ تونسہ میں سجادہ نشین دربار عالیہ سلیمانیہ تونسہ خواجہ عطا اللہ تونسوی کی زیر صدارت ہنگامی اجلاس ہوا جس میں ملک بھر سے درجنوں سجادہ نشینوں نے شرکت کی ہے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سجادہ نشین دربار عالیہ سلیمانیہ تونسہ خواجہ عطا اللہ تونسوی کا کہنا تھا کہ ابھی پیر حمید الدین سیالوی نے صرف رانا ثنا اللہ کے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ہے جبکہ ابھی ہم میں سے کسی اور سجادہ نشین نے باقاعدہ استعفے نہیں مانگے،اگر ہم سب نے استعفے مانگے تو 65سے زائد استعفے تیار ہیں۔

Facebook Comments

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں